اب گاڑی خود جاکر سامان لے آئے گی ۔۔ بغیر ڈرائیور کے چلنے والی کار آپ کی کون کون سی مشکلیں آسان بنائے گی؟

دنیا بھر میں ٹیکنالوجی کی مدد سے انسانی زندگیوں کو آسان سے آسان بنانے کی کوشش جاری ہے اور کمپنیاں ایسی مصنوعات متعارف کروارہی ہیں جن سے انسانوں کوسہولیات مہیا کی جاسکیں، ایسی ہی ایک کوشش چائنہ میں بھی سامنے آئی ہے جہاں بغیر ڈرائیور کے چلنے والی خود کار گاڑی متعارف کروادی گئی ہے۔

چین کی کمپنی بیدو نے اپنی نئی الیکٹرک خودکار گاڑی متعارف کرائی ہے جو مارکیٹ میں موجود گاڑیوں سے مختلف ہے، اس آٹونومس وہیکل یعنی خودکار گاڑی کی خاص بات یہ ہے کہ اس کو چلانے کے لیے کسی ڈرائیور کی ضرورت نہیں ہوگی کیوں کہ یہ گاڑی بغیر ڈرائیور کے بھی چل سکے گی۔

اس کار میں ڈیٹیچ ایبل اسٹیرنگ وہیل دیا گیا ہے یعنی اسے باآسانی ہٹایا جا سکتا ہے اور ضرورت پڑنے پر اسے دوبارہ گاڑی میں لگایا جا سکتا ہے۔اس گاڑی کا نام اپولو آر ٹی 6
ہے جس نے ٹیکنالوجی کے پانچ ممکنہ لیولز میں سے 4 لیول حاصل کیے ہیں۔

اس گاڑی کا سسٹم بغیر ڈرائیور کے چل سکتا ہے لیکن اس کے لیے تفصیلی نقشہ پہلے سے اپ لوڈ کرنے کی ضرورت ہوگی تاکہ ان علاقوں کو محدود کیا جائے جہاں گاڑی چل سکتی ہے،اس نئی گاڑی آٹونومس لیول 4 کی صلاحیتوں سے لیس گاڑی میں 8 لڈرز اور 12 کیمرے لگے ہوئے ہیں۔

گاڑی میں لڈرز ریڈار کی طرح کا ایک پتہ لگانے کا نظام ہے جو ریڈیو ویوز کے بجائے پلسز لیزر لائٹ کا استعمال کرتا ہے۔اس کی قیمت گزشتہ جنریشنز کے مقابلے میں کم رکھی گئی ہے۔

یاد رہے کہ بیدو خودکار سفری سروس اپولو گو پہلے سے ہی چلا رہا ہے جس میں وہ اپنی خودکار ڈرائیونگ کی روبوٹیکسز کا استعمال کر رہا ہے جس میں حفاظتی اسٹاف ڈرائیور یا مسافر کی نشست پر بیٹھتا ہے۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

20 + five =

Back to top button