بارشیں ہمارے بچپن میں خوشی لاتی تھیں، اب تو قیامت کا منظر ۔۔ بشریٰ انصاری بارشوں میں ہونے تباہی اور ڈوبتے کراچی کے حال پر افسوس کرتے ہوئے

بارش کا موسم اس وقت شہرِ کراچی اور ملک بھر میں ہی ہے۔ ہر کوئی بارش کا پہلے انتظار کرتا تھا کہ بارش ہوگی تو ہم خوشی منائیں گے، میٹھے پکوڑوں اور آلو کے چٹ پٹے پکوڑوں کا اہتمام کریں گے۔ کسی کو بارش کا انتظار اس لیے ہوتا تھا کہ سہیلیاں مل کر کھیلیں گی، لیکن اب تو شہرِ کراچی میں بارش کا موسم زحمت بن کر آتا ہے۔ ڈر ہی لگتا ہے کہ انسان زندہ بھی بچے گا یا نہیں، کہیں کرنٹ سے تو نہیں مر جائے گا، کہیں گھر تو نہ ڈوبے گا؟

اسی بگڑتی صورتحال پر اداکارہ بشریٰ انصاری نے ایک ویڈیو بنائی اور اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر شیئر کی جس میں وہ افسوس کرتے ہوئے کہتی ہیں کہ:

بارش کا موسم تو ہمارے بچپن میں خوشیاں لایا کرتا تھا، پہلے مل بانٹ کر خوشیوں کو بارش میں منایا جاتا تھا لیکن اب تو خصوصا کراچی میں ڈر ہی لگا رہتا ہے کہ کب گھر ڈوب جائے، کب کرنٹ لگ جائے، کب بجلی گرے اور جانیں چلی جائیں۔ ہر جگہ پانی بھرا رہتا ہے، کئی دن بھی گزرنے کے بعد پانی ختم نہیں ہوتا، لوگ پریشان رہتے ہیں۔ صرف عام گھروں میں رہنے والے نہیں بلکہ ڈیفینس جیسے پوش علاقے کے لوگ بھی پریشان رہتے ہیں ان کے بھی گھروں میں پانی بھر گیا، یہ کونسا طریقہ ہے؟ میں یہاں کسی کو تنبیہہ کیے بغیر کہہ رہی ہوں کہ یہ بات سندھ حکومت کے لیے ہے۔ کراچی کا کیا حال ہوگیا ہے۔ اب تو لگتا ہے قیامت خیز منظر ہو شہرِ کراچی۔۔۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

five + 16 =

Back to top button