بلوچستان عوامی پارٹی کابھی تحریک انصاف سے اتحاد پرنظرثانی کافیصلہ

حکومتی اتحادی میں شامل بلوچستان عوامی پارٹی بھی  پاکستان تحریک انصاف کے رویے سے نالاں ہوگئی، ’باپ‘ نے پی ٹی آئی کے ساتھ تعلقات پر نظرثانی کا فیصلہ کرلیا۔کوئٹہ میں بلوچستان عوامی پارٹی  کے رہنماؤں کی اہم بیٹھک ہوئی جس میں چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی، وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو، اسپیکر صوبائی اسمبلی جان محمد جمالی، اراکین سینیٹ، قومی اسمبلی اور صوبائی وزراء نے  شرکت کی۔بلوچستان عوامی پارٹی کی قیادت نے وفاقی حکومت کی جانب سے پارٹی کو مسلسل نظر انداز کئے جانے پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وفاق میں بی اے پی، پی ٹی آئی کی سب سے بڑی اتحادی جماعت ہے لیکن بڑا اتحادی ہونے کے باوجود ’باپ‘ کو اس کا جائز مقام نہیں دیا جارہا ہے، وفاقی کابینہ میں بی اے پی کی نمائندگی نہ ہونے کے برابر ہے۔ارکان کا کہنا ہے کہ بی اے پی وفاق میں پی ٹی آئی کی غیرمشروط حمایت کرکے تھک چکی ہے۔

بلوچستان عوامی پارٹی کے اجلاس کے دوران پی ٹی آئی کے ساتھ تعلقات پر نظرثانی کا فیصلہ کیا گیا جبکہ ارکان نے مطالبہ کیا کہ وزیراعلیٰ بلوچستان پارٹی کے تحفظات سے وزیراعظم کو آگاہ کریں اور مطالبات پورے نہ ہونے، تحفظات دور نہ کرنے کی صورت میں بی اے پی آئندہ کا لائحہ عمل طے کرے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

two + five =

Back to top button