بچوں کو دودھ پلانے والی ماؤں کے لیے ڈاکٹر بلقیس کی بتائی گئی خاص ٹپ جس سے ہو ان کی بڑی مشکل آسان

بچوں کی نشوونما کے لیے ماں کا دودھ ایک اہم جز ہے۔ کہا جاتا ہے کہ بچے کو 2 سال تک ماں کا دودھ پلایا جائے تاکہ اس کی ہڈیاں بھی مضبوط رہیں اور اس کا مدافعتی نظام بھی بہتر رہے۔ وہ مائیں جن کو دودھ کی کمی کا مسئلہ نہیں ہوتا وہ اپنے بچوں کو بآسانی 1 یا 2 سال تک دودھ پلا سکتی ہیں لیکن ایسی مائیں جن کے بچے کمزور ہوں اور ان کو دودھ کی کمی کا مسئلہ ہو تو ان کے لیے بچوں کی صحت کو بڑھانا اور بہتر انداز میں نشوونما کرنا مشکل ہو جاتا ہے۔ ایسی تمام خواتین کے لیے ڈاکٹر بلقیس نے بتائی ایک خاص ٹپ جس سے دودھ کی کمی بھی نہ ہو اور بچے کا پیٹ بھی بھرا رہے۔

ٹپ :

٭ 50 گرام مخانوں کو اچھی طرح پیس کر پاؤڈر بنا لیں، پھر اس میں 20 گرام بنولا کے بیج اور 20 گرام سونف کو اچھی طرح باریک پیس لیں۔ تمام چیزوں کو پاؤڈر کی شکل میں یکجان کرلیں۔

٭ روزانہ رات کو سونے سے قبل اس پاؤڈر کو ایک گلاس نیم گرم دودھ میں اچھی طرح مکس کرکے پی لیں۔

فائدہ:

٭ اس سے ماں کے دودھ میں بھی اضافہ ہوگا اور بچے کی صحت کے لیے بھی مناسب ہے۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

15 + 15 =

Back to top button