تربوز کے بیج کو دھوپ میں سکھا کر کھانے سے کیا فائدہ ہوتا ہے؟ جانیے تربوز کے بیج کے ایسے فائدے جو جان کر آپ بھی ان کو پھینکنے سے پہلے سوچیں گے

تربوز کا موسم آئے اور ٹھنڈے ٹھنڈے تربوز نہ کھائیں تو مزہ ہی نہ آئے۔ تربوز کا لال سا شربت گرمی بھگانے میں بڑا کردار ادا کرتا ہے۔
لیکن تربوز کھانے کے بعد اس کے بیج کیوں پھینک دیتی ہیں؟ کیا آپ کو نہیں معلوم کہ ان بیجوں میں بھی قدرت نے بڑے فائدے چھپا رکھے ہیں۔

استعمال کیسے کریں؟

اُبال کر استعمال:

تربوز کے 20 سے 30 بیج لے کر انہیں پیس لیجیے اور پھر تقریباً 8 کپ پانی میں یہ پسے ہوئے بیج ڈال کر اسے 15منٹ تک ابال لیں۔ ہوگیا تیار تربوز کے بیجوں کا قہوہ ۔
اس قہوے کا چند دن تک استعمال جاری رکھیں بشرطیکہ ہر دو دن بعد ایک دن کا وقفہ لازمی کرلیں۔

دھوپ میں سُکھا کر:

تربوز کے بیجوں کو دھوپ میں سکھا کر خُشک کرلیں اور پھر ان کا پاؤڈر بناکر کھائیں۔ دودھ میں مکس کرکے پی بھی سکتے ہیں۔ اگر بالوں میں خشکی و سکری یا پھر جوؤں کے مسائل ہیں تو بیجوں کے پاؤڈر کو لیموں کے عرق میں مکس کرکے بالوں میں لگائیں۔ ٹھنڈک کا احساس بھی ہوگا اور جوئیں بھی مر جائیں گی۔

فائدے
:

٭ یہ بیج جسم میں بلڈ شوگر کو کنٹرول رکھتے ہیں انسولین کی مقدار کو گھٹا کر آپ کا شوگر تیزی سے کنٹرول کرنے میں مدد دیتے ہیں۔

٭ ان بیجوں میں کیلوریز زیادہ پائی جاتی ہیں جو کہ آپ کی جسمانی طاقت کو بڑھاتی ہیں ایسے لوگ جو جلدی تھک جاتے ہیں وہ ان کے استعمال سے انرجی حاصل کرسکتے ہیں۔

٭ ان میں موجود میگنیشئیم اور پوٹاشئیم ہڈیوں میں کمزوری نہیں آنے دیتا اور انھیں ہر وقت فعال رکھتا ہے۔

٭ آپ اپنے بالوں کے گرنے اور کمزوری سے پریشان ہیں تو تربوز کے بیج پھینکنے کے بارے میں ہرگز نہ سوچیں کیونکہ اس میں وافر مقدار میں آئرن، کاپر، میگنشیئم موجود ہوتا ہے ۔ اور جب اس کے بیجوں کو کرش کر کے دہی میں ملا کر آپ بالوں میں لگائیں گے تو آپ کے بالوں میں دوبارہ جان آجائے گی اور بال ٹوٹنا بھی کم ہوجائیں گے۔

٭ چہرے پر ایکنی کی شکایت ہے تو تربوز کے بیجوں کا تیل لگائیں یہ اس قدر ٹھنڈا اور راحت بخش ہوتا ہے کہ اس کے روزمرہ استعمال سے چہرے کی تمام ایکنی اور داغ دھبے ختم ہوجاتے ہیں۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

nine − 2 =

Back to top button