شہریار آفریدی کو کشمیر کمیٹی کے چیئرمین کے عہدے سے ہٹا دیا گیا

پاکستان تحریک انصاف کے ایم این اے شہریار آفریدی کو کشمیر کی کمیٹی کے چیئرمین کے عہدے سے فارغ کردیا گیا ہے۔جمعرات کو پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر کا اجلاس ہوا جس کے دوران شہریار آفریدی کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک لائی گئی۔شہریار آفریدی کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک کے حق میں 16 اراکین نے ووٹ دیے جس کے بعد شہریار آفریدی کو عہدے سے فارغ کردیا گیا۔شہریار آفریدی کو پی ٹی آئی کی حکومت کے دوران پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر کا چیئرمین مقرر کیا گیا تھا۔امپورٹڈ حکومت آج کشمیر کمیٹی کا اجلاس بلا کر میرے خلاف عدم اعتماد لارہی ہے۔ کیسا عدم اعتماد جبکہ میں نے عہدے کو اپنے قائد کے حکم پر خود ٹھوکر ماری۔کشمیر کا سودا مودی سے کرنے والے کس منہ سے کشمیر کمیٹی کا نیا چیئرمین لائیں گے جبکہ مولانا فضل الرحمان کادس سالہ سیاہ دور سب کو یاد ہے

— Shehryar Afridi (@ShehryarAfridi1) July 14, 2022

پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر کے چیئرمین کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد شہریار آفریدی نے ٹوئٹر پر ایک بیان میں کہا کہ ’امپورٹڈ حکومت آج کشمیر کمیٹی کا اجلاس بلا کر میرے خلاف عدم اعتماد لا رہی ہے، کیسا عدم اعتماد جبکہ میں نے عہدے کو اپنے قائد کے حکم پر خود ٹھوکر مار دی تھی۔‘’کشمیر کا سودا مودی سے کرنے والے کس منہ سے کشمیر کمیٹی کا نیا چیئرمین لائیں گے، جبکہ مولانا فضل الرحمان کا 10 سالہ سیاہ دور سب کو یاد ہے۔‘خیال رہے کہ شہریار آفریدی کو عہدے سے فارغ کرنے کے بعد پی ٹی آئی کے منحرف رکن باسط بخاری کو چیئرمین کشمیر کمیٹی منتخب کیا گیا ہے۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

three + 6 =

Back to top button