فونز کو جاسوسی سے بچانے کیلئے اینڈرائیڈ کا خفیہ فیچر

گوگل کی جانب سے لاکھوں اینڈرائیڈ صارفین کو خبردار کیا جا رہا ہے کہ ایپلی کیشنز کب ان کی جاسوسی کر رہی ہیں، اس کے لیے ایک فیچر متعارف کرایا گیا ہے جو صارفین کو مائیکرو فون یا کیمرا ایکٹیویٹ ہونے پر خبردار کرتا ہے۔اس طرح کا ایک فیچر ایپل کے آئی فونز میں پہلے سے موجود ہے۔ تاہم، گوگل نے تازہ ترین اینڈرائیڈ 12 اپ ڈیٹ کے ساتھ اس فیچر کو فونز میں شامل کردیا ہے۔لہٰذا اگر آپ کے پاس اپڈیٹڈ اینڈرائیڈ 12 موجود نہیں، تو آپ اسے نہیں دیکھ پائیں گے۔جب بھی کوئی ایپ کیمرا یو مائیکروفون تک رسائی حاصل کرنے کی کوشش کرے گی تو ایک آئیکن فون کے دائیں کونے پر نظر آئے گا۔

یہ فیچر ایپلی کیشنز کو بنا آگاہ کئے کچھ سننے یا آپ کے کیمرے کے ذریعے کچھ دیکھنے سے روکتا ہے۔اس کے علاوہ آپ رولنگ لاگ بھی دیکھ سکتے ہیں کہ کن ایپس کو اور کب آپ کے کیمرے، مائیکروفون یا مقام تک رسائی حاصل ہوئی ہے۔یہ معلومات سیٹنگز کے اندر نئے پرائیویسی ڈیش بورڈ میں دستیاب ہوتی ہیں۔خیال رہے کہ ضروری نہیں آئیکن اجاگر ہو تو لازمی کچھ غلط ہو رہا ہے۔بعض اوقات انسٹاگرام جیسی کسی ایپ کو حقیقی طور پر آپ کا کیمرا استعمال کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔لیکن اگر آپ دیکھیں کہ آپ کا کیمرا ایک ایسی ایپ استعمال کر رہی ہے جس کا کیمرا سے کوئی تعلق نہیں تو اس کا مطلب ہو سکتا ہے کہ آپ کی جاسوسی کی جا رہی ہو۔سائبر ماہرین نے ایسی لاتعداد ایپس کا پردہ فاش کیا ہے جو اینڈرائیڈ فونز پر کیمرے تک نامناسب طریقے سے رسائی رکھتی ہیں۔لہٰذا یقینی بنائیں کہ آپ Android 12 استعمال کر رہے ہیں، اگر آپ کو شک ہے کہ کچھ ہو گیا ہے، تو آپ کو سیٹنگز میں ایپ کی پرمیشنز کو چیک کرنا چاہیے۔مثال کے طور پر، آپ اپنے مائیکروفون یا کیمرے تک مخصوص ایپس کی رسائی کو روک سکتے ہیں۔اور اگر آپ واقعی پریشان ہیں، تو آپ ایپ کو مکمل طور پر ان انسٹال بھی کر سکتے ہیں۔ Square Adsence 300X250

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button