مارک زکربرگ کو ایک دن میں 29ارب ڈالر کا نقصان

تازہ ترین سہ ماہی رپورٹ کے مطابق فیس بک اور واٹس ایپ کی ملکیتی کمپنی ’میٹا‘ کے سی ای او مارک زکربرگ کو کمپنی کے حصص کی قیمت گرنے سے مجموعی طور پر ایک دن میں 29 ارب ڈالر کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔کمپنی کی جانب سے توقع سے کم آمدنی کے اعداد و شمار اور 18 سالہ تاریخ میں پہلی بار فیس بک کے صارفین کی تعداد میں کمی کے اعلان کے بعد 3 فروری کو میٹا کے حصص ایک گھنٹے کی ٹریڈنگ میں تقریباً 25 فیصد تک گرگئے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ فیس بک کے فعال صارفین کی تعداد میں یومیہ 10 لاکھ کی کمی کے باعث اس کے مجموعی صارفین کی تعداد کم ہوکر 1.929 ارب ہوگئی، جس کیلئے میٹا نے ٹک ٹاک اور یوٹیوب جیسی حریف کمپنیوں سے مقابلے بازی کو ذمہ دار ٹھہرایا۔مارک زکربرگ کا اس صورتحال پر کہنا ہے کہ ٹیمیں کافی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کررہی ہیں اور مصنوعات بہت تیزی سے بڑھ رہی ہیں،  یہاں جو چیز کسی حد تک منفرد ہے وہ یہ ہے کہ ٹک ٹاک پہلے سے ہی ایک بڑا مدمقابل ہے جو کافی تیزی سے آگے بڑھتا جارہا ہے۔فیس بک کی خراب کارکردگی نے کمپنی کی اسٹاک مارکیٹ میں قدر کو تقریباً 200 ارب ڈالر کم کردیا۔بلومبرگ بلینیئرز انڈیکس کے مطابق فیس بک بانی مارک زکربرگ دنیا کے ساتویں امیر ترین شخص ہیں، حصص کی قیمت میں حالیہ کمی سے قبل ان کی مجموعی دولت کی مالیت کا تخمینہ 121 ارب ڈالر تھا۔زکربرگ نے کہا ہے کہ انہیں یقین ہے کہ میٹاورس پر کمپنی کی نئی توجہ آمدنی اور ترقی کے نئے سلسلے کیلئے ایک وسیع موقع ثابت ہوگی، حالانکہ کچھ لوگ اب بھی اس ورچوئل دنیا کے وعدے کے بارے میں شکوک و شبہات کا شکار ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.

twenty + 6 =

Back to top button