مشرقِ وسطیٰ میں 2025 تک اڑنے والی گاڑیاں متعارف کرائے جانے کا اماکان

رولز رائس اور ورٹیکل ایروسپیس کے حکام نے کہا ہے کہ وہ 2025 تک اُڑنے والی گاڑیاں متعارف کروائیں گے اور مشرق وسطیٰ اس کےلیے آئیڈیل مارکیٹ ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ کمپنیاں ورٹیکل ٹیک آف اور لینڈنگ کرنے والا ایئرکرافٹ وی اے ایکس فور تیار کر رہی ہیں جو دھوان نہ چھوڑنے والے شہری ٹرانسپورٹ کے نظام میں ایک نیا اضافہ ہوگا۔ورٹیکل ایروسپیس کے پاور سپلائی کے سربراہ لارنس بلیکلے نے کہا کہ ’ہم 2025 تک 50 ایئر کرافٹس متعارف کرائیں گے اور اس دہائی کے آخر تک ہمارا ہزاروں ایئر کرافٹس تیار کرنے کا ہدف ہے۔‘دونوں کمپنیوں نے یہ ایئر کرافٹ مشرق وسطیٰ میں متعارف کروانے پر اتفاق کیا ہے، لیکن سب سے پہلے ان کا کمرشل استعمال امریکا میں کیا جائے گا۔لارنس بلیکلے نے تصدیق کی کہ وہ اپنے ایئرکرافٹس  کے لیے نیوم اور علاقائی حکام کے ساتھ بات چیت کر رہے ہیں اور کہا کہ ’ہم پرانی مارکیٹس کی جگہ نئی مارکیٹوں پر توجہ دے رہے ہیں۔‘رولز رائس کے گیبریل تیوفولی نے کہا کہ اگر انفراسڑکچر کو دیکھا جائے تو مشرق وسطیٰ کو اپنے ماحول کی وجہ سے برتری حاصل ہے۔’آپ جہاں چاہیں ورٹیکل ایئر پورٹس بنا سکتے ہیں، کیونکہ وہاں بہت سی اضافی زمین ہے۔‘’پرانے براعظموں کے برعکس ہمارے پاس موقع ہے کہ ہم اپنی مرضی سے انفراسٹرکچر تعمیر کر سکیں۔‘رولز رائس الیکڑیکل کے سربراہ راب واٹسن نے کہا کہ مشرق وسطیٰ کی اربن ایئر موبیلٹی کے بارے میں ویژن کمپنی کو جدید ٹرانسپورٹیشن میں سرمایہ کاری میں مدد دیتی ہے۔ Sq. Adsence 300X250

Leave a Reply

Your email address will not be published.

4 + sixteen =

Back to top button