مشہور زمانہ موبائل گیم نے ہزاروں اکاؤنٹس بند کردیے

دنیا کے معروف اور ایکشن سے بھرپورگیم بیٹل گراؤنڈز نے غیرقانونی ڈاؤن لوڈزاوردوسرے کھلاڑیوں کے ساتھ چیٹنگ کرنے پرایک ہفتے میں 40 ہزارسے زائد کھلاڑیوں پرتاحیات پابندی عائد کردی ہے۔

بیٹل گراؤنڈ انڈیا موبائل کے پبلشرکرافٹون کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ رواں ماہ 11 سے 17 اپریل کے درمیان چالیس ہزارایسے اکاؤنٹس کو بند کردیا گیا ہے جوکہ کھیل میں غیرمعمولی فوائد حاصل کرنے کے لیے غیرقانونی اورغیراخلاقی طریقے استعمال کررہے تھے۔جنوبی کوریا سے تعلق رکھنے والی گیمنگ کمپنی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ مجموعی طورپر41 ہزار898 اکاؤنٹس پرپابندی لگائی گئی ہے اوراب وہ اپنی موجودہ ڈیوائسزپرتاعمربیٹل گراؤنڈزموبائل نہیں کھیل سکیں گے۔کرافٹون نےبی جی ایم آئی کی آفیشل ویب سائٹ پرایسے تمام چیٹرکھلاڑیوں کے ناموں پرمشتمل فہرست بھی شایع کردی ہے۔ گزشتہ ہفتے بھی کرافٹون نے 49 ہزار327 اکاؤنٹس پرپابندی لگائی تھی۔یہ بھی پڑھیں: بیٹل گراؤنڈ کے کھلاڑی آج سے لیمبر گینی چلا سکیں گےاکاؤنٹس پرعائد پابندی کے حوالے سے گیم ڈیولپرکا کہنا ہے کہ ہمارے پلیٹ فارم پرکسی بھی قسم کی غیرقانونی اور غیراخلاقی سرگرمیوں کی اجازت نہیں ہے۔اپنے گیمنگ پلیٹ فارم کودوسرے کھلاڑیوں کے لیے محفوظ اورقابل بھروسہ بنانے کے لیے ہم ہفتہ واربنیادوں پراکاؤنٹس کی جانچ کرتے ہیں۔ شرائط و ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والے اکاؤنٹس کے خلاف فوری کارروائی کرتے ہیں۔اگرکوئی کھلاڑی ایسی حرکت میں ملوث پایا جائے جس سے دوسرے کھلاڑیوں کے کھیل پرمنفی اثرات مرتب ہوں تونہ صرف ان کا اکاؤنٹ بلکہ ان کی ڈیوائسزکوبھی بلیک لسٹ کردیا جاتا ہے۔یاد رہے کہ ایک بارپابندی کا سامنا کرنے والے کھلاڑی تاحیات ان ڈیوائسزپربیٹل گراؤنڈ نہیں کھیل سکتے جن پران کے اکاؤنٹس بند کیے گئے ہوں۔کرافٹون کی جانب سے 2021 میں بھی غیرقانونی سرگرمیوں پرمجموعی طور پر 6 لاکھ سے زائد اکاؤنٹس پرپابندی لگائی گئی تھی۔ Double Click 300X250

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

3 × two =

Back to top button