پڑوسی ستارے کے ہاتھوں وزن کھوتا ستارہ

ماہرین فلکیات نے ایک ’سلِمر‘ قسم کا ریڈ جائنٹ دریافت کیا ہے جس کے متعلق ان کا ماننا ہے کہ اس وزن اس کا پڑوسی ستارہ کھینچ رہا ہے۔

ماہرین نے ماضی میں ایسی اشیاء کے متعلق پیش گوئی کی تھی لیکن یہ ایسے مظہر کا پہلا ثبوت ہے۔یونیورسٹی آف سِڈنی کے محققین نے صرف ایک نہیں بلکہ کچھ 40 سلِمر ریڈ جائنٹس دریافت کیے جو عام ریڈ جائنٹس ستاروں کے سمندر میں کہیں چھپے ہوئے تھے۔محققین کا کہنا تھا کہ یہ دریافت ملکی وے کہکشاں کے اندر موجود ستاروں کی زندگیوں کو سمجھنے میں اہم قدم ہے۔یونیورسٹی آف سِڈنی کے پی ایچ ڈی کے امیدوار اور تحقیق کے سربراہ مصنف ییگوانگ لی کا کہنا تھا کہ یہ ’فائنڈنگ والڈو‘ جیسا تھا۔انہوں نے کہا کہ ہم انتہائی خوش قسمت ہیں کہ کچھ 40 سلِمر ریڈ جائنٹس کو ڈھونڈا ہے جو عام ریڈ جائنٹس ستاروں کے سمندر کے درمیان چھپے ہوئے تھے۔سلِمر ریڈ جائنٹس سائز میں چھوٹے یا پھر وزن میں عام ریڈ جائنٹس سے کم ہوتے ہیں۔ہماری کہکشاں میں لاکھوں ٹھندے اور چمکیلے ریڈ جائنٹس موجود ہیں۔ ہمارا سورج بھی چار ارب سال کے عرصے میں ایک ریڈ جائنٹ بن جائے گا۔لیکن سلِمر ریڈ جائنٹ کا وزن ڈرامائی انداز میں کم ہوتا ہے جس کے متعلق سائنس دانوں کا خیال ہے کہ ممکنہ طور پر اس کے برابر میں موجود سیارے کی وجہ سے ہوتا ہے جو اس کا مواد اپنے اندر کھینچ لیتا ہے۔ Adsence Ads 300X250

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

15 + one =

Back to top button