ڈی جی ایف آئی اے کو عہدے سے کیوں ہٹایا گیا؟ وجہ سامنے آگئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)ڈی جی ایف آئی اے کو عہدے سے کیوں ہٹایا گیا؟ وجہ سامنے آگئی۔ وفاقی حکومت رائے طاہر پر عمران خان کیخلاف کیسز کے لیےدباؤ ڈالتی رہی۔نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کو ذرائع نے بتایا ہے کہ وفاقی حکومت رائے طاہر پر عمران خان کیخلاف کیسز کے لیے دباؤ ڈالتی رہی۔ انہیں گزشتہ حکومت کے فیصلوں کو کرپشن کے ساتھ جوڑنے کا کہا گیا۔ذرائع کے مطابق ڈی جی ایف آئی اے پر 40 ارب کے معاملے کو بھی عمران خان سے جوڑنے کی ہدایت دی گئی۔ تاہم رائے طاہر نے دوٹوک موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کا براہ راست تعلق نہیں اس لیے کیس نہیں بنا سکتا۔ذرائع نے بتایا کہ رائے طاہر پر توشہ خانہ کیس بنانے کے حوالے سے بھی دباؤ ڈالا گیا تاہم اس پر بھی ڈی جی ایف آئی نے حکومت پر واضح کیا کہ قانون کے تحت توشہ خانہ کا کوئی کیس عمران خان پر نہیں بنتا۔واضح رہے کہ وفاقی کابینہ نے ڈی جی ایف آئی اے رائے طاہر کو ہٹا دیا ہے۔نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی کابینہ نے ڈی جی ایف آئی اے رائے طاہر کو ہٹانے اور محسن بٹ کو نیا ڈی جی ایف آئی اے لگانے کی منظوری دے دی ہے۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

fifteen + 14 =

Back to top button