کراچی میں مندروں کےاطراف تجاوزات،سندھ حکومت سےجواب طلب

سپریم کورٹ نے کراچی میں مندروں کے اطراف تجاوزات پر سندھ حکومت سے جواب طلب کرلیا ہے۔گیارہ مئی بروزبدھ کو سپریم کورٹ میں اقلیتوں کےحقوق سے متعلق ازخود نوٹس کی سماعت ہوئی۔جسٹس اعجاز الاحسن کی سربراہی میں 3 رکنی نے درخواست پر سماعت کی۔درخواست گزار سیموئل پیارے نے عدالت کے بتایا کہ قومی اقلیتی کلچرل ایوارڈز کی تقریب 2012ء سے اب تک نہیں ہوئی، سرکاری سطح پر ایوارڈز سے اقلیتوں کی حوصلہ افزائی ہوتی تھی۔عدالت نے قومی اقلیتی کلچرل ایوارڈز کی تقریب نہ ہونے پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کرلیا۔سپریم کورٹ نے ایگری کلچرل ریسرچ سینٹرنوشہرہ کو ڈی سیل کرنے کا حکم دیا۔ ایف آئی اے نےمتروکہ وقف املاک کو عدم ادائیگی پرسینٹر سیل کیا تھا۔عدالت نے حکم دیا کہ صوبائی حکومت 30 جون تک 2 کروڑ 33 لاکھ روپےکےبقایاجات ادا کرے۔لاہورہائیکورٹ کاتمام سرکاری ملازمتوں میں اقلیتوں کا کوٹہ مختص کرنےکاحکماس کے علاوہ سپریم کورٹ نے نصاب پرعدالتی کمیشن اور نصاب کونسل کو مل بیٹھنے کی ہدایت کی۔ جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دئیے کہ مل بیٹھ کر نصاب سے متعلق اعتراضات کا حل نکالیں،عدالت کا کام نصاب تشکیل دینا نہیں ہے۔جسٹس اعجاز الاحسن نے یہ بھی ریمارکس دئیے کہ نصاب کیلئے قومی نصاب کونسل موجود ہے،اسی کا فیصلہ حتمی ہوگا۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

two × 4 =

Back to top button