گرمی دانوں کیسے دور بھگائیں؟ جانیئے 3 ایسے طریقے جن سے آپ کو ان دانوں سے مل جائے گی نجات اور گرمیاں گزریں گی آسان

گرمی کا موسم آتے ہیں بچوں بچوں سمیت بڑوں کو گرمی دانوں کا سامنا رہتا ہے جو انہیں دن رات پریشانی میں مبتلا کر کے رکھتے ہیں۔

ان کو ختم ہونے میں کچھ دن لگتے ہیں جیسے جب موسم تھوڑا نارمل ہوجاتا ہے تو دانے اپنے آپ ٹھیک ہوجاتے ہیں۔

گرمی دانے کیوں ہوتے ہیں؟

دراصل گرمی دانے جلد کے بند مساموں کی وجہ سے ہوتے ہیں کیونکہ وہاں سے پسینہ خارج نہیں ہوپاتا۔ بہت سے دوسرے عوامل بھی اس میں شامل ہو سکتے ہیں، جیسے گرم اور مرطوب آب و ہوا، موٹے کپڑے یا ایسے لباس جو گرمی کو دعوت دیں، کریم کا استعمال وغیرہ۔

ان دانوں کا علاج کیسے کیا جائے کہ ان کی تکلیف بڑھنے سے پہلے اس کا علاج نکال لیا جائے؟ آیئے جانتے ہیں بہترین طریقہ۔

1-ایک کھیرا لیں اور اس کو کاٹ کر ٹکڑے کر کے اس کے پیس کر گاڑھا پیسٹ بنا لیں، یہ پیسٹ 5 سے 10 منٹ کے لیے متاثرہ جگہ پر لگالیں۔

اس عمل کو 2 سے 3 دفعہ کیا جا سکتا ہے۔

کھیرے میں ٹینن اور فلیوانوائڈز شامل ہوتے ہیں جو کہ اینالجیسک اور سوزش کے خلاف کام کرنے کی خاصیت رکھتے ہیں، یہ خصوصیت بچوں میں گرمی دانوں کو پرسکون کرنے میں مدد دیتی ہے۔

2- ملتانی مٹی گرمی دانوں کے لیے کارآمد ثابت ہوسکتی ہے۔ آدھا کھانے کا چمچ ملتانی مٹی میں پانی کے ساتھ ملا کر پیسٹ بنالیں، 10 منٹ کے لیے اسے تمام متاثرہ جگہوں پر لگائیں پھر پانی سے دھو لیں۔

(*3*)

اسے ہر 2 سے 3 دن میں ایک بار کیا جاسکتا ہے۔

3- تازہ تازہ ایلو ویرا جیل پانچ سے دس گرمی دانوں والی جگہ پرلگائیں، اور تھوڑی دیر بعد اسے پانی سے دھو لیں۔ اسے روزانہ دن میں ایک بار کیا جاسکتا ہے۔

یہ چند بہترین طریقے اپنا کر آپ اپنی گرمیوں کو آسان بنا سکتے ہیں اور دانوں سے چھٹکارا حاصل کرسکتے ہیں۔

Source

Leave a Reply

Your email address will not be published.

19 − nine =

Back to top button