ہزاروں مزیدار کھانے بنانے والا روبوٹ شیف تیار

مزیدار کھانا پکا یقیناً ایک فن ہے اور اس فن میں یکتا ہونا ہر کسی کے بس کی بات نہیں، لیکن اب روبوٹکس کے ماہر افراد نے اس مشکل کا بھی ایک آسان حل پیش کردیا ہے۔برطانیہ میں قائم روبوٹ تیار کرنے والی کمپنی مولی روبوٹکس نے مولی روبوٹکس کچن کی شکل میں ایک ماہر شیف (باورچی) روبوٹ پیش کردیا ہے۔باورچی خانے کی چھت کے آہنی جنگلے سے منسلک ہونے کے بعد دو روبوٹک بازوؤں والا یہ روبوٹ چولہا جلانے، ساس پین میں چمچ چلانے اور کھانا بھوننے کے ساتھ ساتھ 5 ہزار مختلف ریسیپیز( ڈشیں)  تیار کرنے میں مہارت رکھتا ہے۔استعمال کنندہ کو صرف روبوٹ پر نصب ٹچ اسکرین پر اپنی پسندیدہ ڈش منتخب کرنی ہوں گی، اس کے بعد کے احکامات کے مطابق اس کے بلٹ ان کنٹینر میں اجزائے ترکیبی شامل کریں اور پھر سکون سے بیٹھ کر اپنے پسندیدہ ٹی وی پروگرام سے لطف اندوز ہوں۔ کھانے تیار ہونے پر یہ خودکار طریقے سے آپ کو آگاہ کردے گا۔یہ روبوٹ چولہا جلانے، آنچ کم زیادہ کرنے اور مصالحے مکس کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں جلنے سے بچانے کے لیے الٹ پلٹ بھی سکتا ہے۔

اس روبوٹ کی تیاری میں مدد دینے والے پروفیشنل شیف اور 2011 میں بی بی سی کا ماسٹر شیف مقابلے کے فاتح ٹم اینڈرسن کا اس بابت کہنا ہے کہ ان کے کھانے بنانے کے طریقہ کار کو روبوٹ میں پروگرامنگ کے ذریعے کاپی کردیا گیا ہے اور وہ اسی پروگرام کی بدولت حرکت کرتا ہے۔اس کام کے لیے مولی کچن نے باورچی خانے کا لے آؤٹ بنا کر کھانا بنانے کے دوران میرے ہاتھوں کی حرکات کو ریکارڈ کیا اور پھر ان حرکات کو کمپوٹر پروگرامنگ کے ذریعے اس کے روبوٹکس بازوؤں میں منتقل کردیا گیا۔مولی روبوٹکس کی موجد کمپنی کے چیف ایگزیکٹومارک اولینک کا کہنا ہے کہ یہ سسٹم ایک شیشے کی اسکرین کے پیچھے کام کرتا ہے اور حفاظتی اقدامات کے تحت کسی خطرے یا رکاوٹ کو بھانپ کر اپنا آپریشن فوراً روکنے کا اہل ہے۔

اس روبوٹ شیف کی کم از کم قیمت ڈیڑھ لاکھ پاؤنڈ رکھی گئی ہے۔ Square Adsence 300X250

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button